ہائپوتھائرائیڈ اوراس کی وجہ سے بڑھتے وزن سے ہمشیہ کیلئے نجات کا واحد گھریلو نُسخہ

5,377

ہائپو تھائیرائیڈ پر روپ کارما ویب سائٹ‌پراتنے ریسرچ آرٹیکل ہم نے لکھے ہیں لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ لوگ ٹوٹکے تو بہت پڑھتے ہیں لیکن اپنی بیماری کے بارے میں‌جاننے کی کوشش بہت کم کرتے ہیں‌اور سچ پوچھیں تو ہمیں‌اس بات کا انتہائی دکھ ہوتا ہے. مریض‌کو اپنی بیماری کا اگر ٹھیک طریقے سے پتا چل جائے تو وہ ڈاکٹرز کے ہاتھوں بے دردی سے لوٹے جانے سے بچ جاتا ہےغلط ادویات کے استعمال کو روک لیتا ہے، خوراک اور پھلوں‌کے ذریعے سے بھی اپنی بیماری کے خلاف جنگ کرنے کے قابل ہوجاتا ہے اور سب سے بڑی بات یہ کہ جذباتی اور ذہنی طور پر وہ بیماری کو جان لینے کے بعد اس سے خوفزدہ اور مایوس نہیں‌ہوتا یہ سب سے بڑا ٹوٹکا ہے جو سچی بات ہے ہم نے بے شمار آرٹیکلز میں‌لوگوں‌تک پہنچانے کی کوشش کی ہے لیکن مجال ہے سو بندے سے زیادہ کوئی لنک کو کلک کرجائے جیسے ہی ہم لکھتے ہیں‌کہ تھائیرائیڈ کیا ہے؟ لوگ کلک نہیں‌کرتے اور جیسے ہی لکھتے ہیں‌تھائیرائیڈ کا ٹوٹکا… ہزارون لائکس اور شئیرز حاضر ہوجاتے ہیں. اللہ ہمارے حال پر رحم فرمائے. ریسرچ والا یہ پوسٹ‌نہیں‌ہے اس لئے قصہ مختصر کرتےہوئے علاج کی طرف آتے ہیں.ہائپوتھائیرائیڈ ازم یا ایک کم سر گرم تھا ئیرائیڈ ہاضمے کے نظام کو سست کر دیتا ہے۔ زیادہ تر لوگوں میں وزن بہت بڑھتا ہے جب تھائیرائیڈ کی جانچ نہیں ہوپاتی۔ علاج کے ساتھ ہارمونز میں تو ازن آتا ہے اور وزن جلد ہی اپنی حدوں میں‌واپس آنے لگتا ہے۔ دل کی بات اگر کہوں‌تو ہائپوتھائیرائیڈ انتہائی منحوس بیماری ہے یہ مریض‌کی ساری زندگی کو تباہ و برباد کرکے رکھ دیتی ہے.ہمیں‌آپ کے دُکھ کا بخوبی اندازہ ہے اسی لئے آپ کے لئے انتہائی آسان علاج لیکر حاضر ہوئے ہیں‌اللہ کریم ہماری اس کاوش کو قبول فرمائے اور آپ سب کو شفاء عطا فرمائے. آرام آجائے تو ہمارے لئے دعائے خیر کرنا آپ کے ذمے قرض‌رہے گا کیونکہ ہم دیانتداری سے اپنا کام سرانجام دینے کی پوری کوشش کررہے ہیں‌جو آجکل کے زمانے میں‌جہاد سے کسی صورت کم نہ ہوگا.﷽اذھب الباس رب الناس اشف انت الشافی لا شفاء الا شفائک شفاء لا یغادر سقما۔
اے لوگوں کے رب تکلیف دورکردے اور شفا یابی سے نواز شفا دینے والا تو ہی ہے تیری شفاء کے علاوہ اورکوئی شفا نہیں ایسی شفا نصیب کر جو کوئی بیماری نہ چھوڑے ۔ صحیح بخاری ( 5243 ) صحیح مسلم (4061 ) ۔نسخہ نوٹ کرلیں:ڈیڑھ کپ پانی میں 2 انچ دارچینی کا ٹکڑا، 2عدد چھوٹی الائچی، چوتھائی حصہ چائے کا چمچ سونف اور ڈیڑھ انچ ادرک کا ٹکڑا لیکر کر اچھی طرح ابالیں۔ جب پانی ایک کپ رہ جائےتو نیم گرم ہونے پر پی لیں۔استعمال: یہ قہوہ دن میں2 بار صبح 11 بجے اور سہ پہر 4 بجے پینا ہے۔ وقت کی پاندی لازمی کرنی ہے یہ وقت اس لئے کہ اگر آپ نے صبح 8 بجے بھی ناشتہ کرتے ہیں تو 3 گھنٹے میں معدہ اس کیفیت میں ہوتا ہے کہ نہ تو خالی اور نہ ہی بھرا ہوا یہ انتہائی آئیڈیل وقت مانا جاتا ہے دوائی لینے کا اسی طرح سہ پہر 4 بجے کا مطلب ہے کہ آپ کھانا 1 بجے کھا لیتے ہیں۔ اب اگر آپ کی ٹائمنگ مختلف ہے تو جو حساب میں نے بتایا ہے اس کے مطابق ایڈجسٹ کرلیں یعنی جس بھی وقت ناشتہ اور کھانا کھائیں اس کے تین تین گھنٹے بعد یہ قہوہ لیں۔ اس سے ایک تو آپ کا وزن بہت جلدی اور تیزی سے کم ہونے لگے گا اور ساتھ ہی اللہ کے فضل سے تھائرائیڈ کے لیولز بھی نارمل ہونے لگیں گے اور مسلسل استعمال سے اس منحوس بیماری سے بھی جان چھٹ جائےگی اور سمارٹ بھی ہوجائیں گے۔دیکھئے یہ بات ذہن میں رکھئے کہ گو ہائپوتھائرائیڈ کیلئے یہ قہوہ اللہ کے فضل سے مکمل علاج ہے مگر چونکہ یہ ہارمونز کی بیماری ہے اس لئے ایک تو اسے ٹھیک ہونے میں وقت لگتا ہے اس لئے کم از کم اس قہوے کو تین ماہ اور زیادہ سے زیادہ چھ ماہ تک کا وقت لازمی دینا چاہئیے ۔ صبر سے استعمال جاری رکھیں اللہ سے دُعا کرتے رہیں جیسے ہی افاقہ محسوس ہو شُکر ادا کریں اور قہوے کا استعمال جاری رکھیں یعنی کچھ کو تین ماہ میں فرق پڑجاتا ہے کچھ کو چھ ماہ بھی لگ جاتے ہیں اور جن کا مسئلہ زیادہ خراب ہے انہیں زیادہ وقت بھی لگ سکتا ہے اگر آپ کو لگے کہ فرق تو پڑ رہا ہے مگر افاقے کی رفتار کم ہے تو قہوہ چھ ماہ سے زیادہ بھی جاری رکھیں کوئی مسئلہ نہیں۔ اس قہوے سے آپ کو بہت زیادہ اور قسم کے فائدے بھی ملیں گے یہ کوئی چھوٹا موٹا نیٹ سے کاپی پیسٹ کیا ہوا ٹوٹکا نہیں ہے ۔ آپ ایک ماہ آزمائشی طور پر اسے پئیں انشاء اللہ آپ خود بخود اس کو استعمال کرنے لگیں گے یہی دوائی کے ٹھیک ہونے کی واحد نشانی ہوتی ہے ظاہر ہے کوئی تین یا چھ ماہ کیسے پئے گا اگر کوئی فرق ہی محسوس نہ ہو۔ضروری ہدایات:یہ ہائپو تھائیرائیڈ کا نسخہ ہے اسے ہائپر تھائرائیڈ والے مریض استعمال نہ کریں۔ آپ کیلئے ایک الگ سے پوسٹ لکھوں گا انشاء اللہ۔دودھ پلانے والی مائیں اور حاملہ خواتین استعمال نہ کریں۔ (احتیاط بہتر ہے)۔ 16 سال سے کمر بچوں کو استعمال نہ کروائیں البتہ جن بچیوں کی عمر 14 سال ہے انہیں استعمال کروایا جاسکتا ہے کوئی حرج نہیں۔اگر آپ کا معدہ کمزور ہے اور قہوہ گیس وغیرہ کرے تو ایک دن چھوڑ کر ایک دن پئیں ایسا ایک ماہ کریں اس کے بعد روزانہ شروع کردیں۔اگر آپ تھائراکسن یا کوئی اور دوائی لیتے ہیں تو اسے جاری رکھیں۔ قہوہ لیتے ہوئے تین ماہ گزر جائیں تو ٹیسٹ کروائیں اگر لیولز ٹھیک ہورہے ہوں تو ڈاکٹر سے مشورہ کرکے دوائی کو کم کریں۔ مرد اور خواتین سب کیلئے یہ قہوہ بہترین ہے۔اللہ آپ سب کو شفائے کاملہ عطافرمائے اور بندہ ناچیز کی اس کاوش کو قبول فرمائے۔ آمین۔

کیٹاگری میں : صحت