آنکھوں کی سوجن جادو کی طرح غائب

484

آنکھیں ہماری شخصیت کی عکاسی کرتی ہیں اور ان کی حفاظت میں ذراسی لا پرواہی بہت بڑے نقصان کاسبب بنتی ہے ۔ آنکھوں کے نیچے سوجن کامسئلہ عموماًمورو ثی ہوتاہے ۔ لیکن بعض اوقات ڈسٹ اور فضائی آلودگی کی وجہ سے آنکھوں کے نیچے کی جلد پھول کر تھیلیاں سی بن جاتی ہیں ۔ ان کی موجودگی میں چہرہ کسی عمر رسیدہ فرد کامحسوس ہوتاہے۔عام طور پر تیس سال کی عمر کے بعد آنکھوں کے نیچے کی جلد کی یہ کیفیت نمایاں ہوجاتی ہے ۔ لیکن زیادہ تر گردوں کی بیماریاںاورجگہ کی بیماریوں کی وجہ سے سب سے زیادہ آنکھوں پر ہوتاہے ۔ اس مقصد کے لیے نہ صرف اندرونی علاج ضروری ہے بلکہ آنکھوں کی جلد کی حفاظت بھی بہت اہم ہے ۔
آنکھوں کے نیچے کی جلد زیادہ نازک ہوتی ہے اور اس میں نرمی بھی زیادہ پائی جاتی ہے ۔ اس لیے اس میں جب رطوبت زیادہ جمع ہو جائے تو پھولی پھولی سی تھیلیاں بن جاتی ہیں ۔ اس نسخے کی مدد سے آنکھوں کی سوجن میں نمایاں فرق محسوس کریںگے ۔

اس نسخے کو بنانے کیلئے ہمیں چاہیے
آلو : ایک عدد
کھیر ا : ایک عدد

ترکیب وطریقہ استعمال
قدرتی طور پر ان میں سوزش کے خلاف خصوصیات پائی جاتی ہیں ۔ ان دونوں اجزاء کو چھیل کر ان کے گودے اچھی طرح بلینڈر میں ڈال کر پیسٹ بنا لیں اور پھر یہ گودا پندرہ منت تک آنکھوں پر لگائیں تو اس سے آنکھوں کو سکون ملے گا اور سوجن ختم ہوجائے گی ۔
آنکھوں کی حفاظت زیادہ کرنی چاہیے کیونکہ بازک عضو ہونے کی وجہ سے یہ حساس بھی ہوتی ہیں ۔ اگر آنکھوں میں پانی آئے ، آنکھیں ہر وقت سرخ رہنا شروع ہوجائیں اور بینائی کی کمزوری ہوتو کسی ماہر چشم سے فوری رجوع کرنا چاہیے ۔ اس کے ساتھ ساتھ خوراک متوازن اور پھلوں کااستعمال زیادہ کرنا شروع کریں ۔