سینے کی جلن کے اسباب اور اس سے نجات کے لئے زبردست گھریلو علاج۔۔۔

1,786

سینے کی جلن ایک طرح سے ہاضمے کی خرابی کی ہی ایک شکل ہے ۔ یہ جلن اس وقت ہوتی ہے جب تیزابی مادے اور ہاضمے میں مدد دینے والے رفیق مادے واپس غذا کی نالی کی طرف آتے ہیں۔ اس نالی کے اندر چونکہ حفاظتی جھلی نہیں ہوتی ، لہذ ااس میں سوزش اور درد پیدا ہوجاتا ہے۔ اگر اس کا علاج نہ کیا جائے تو جلن بڑھتے بڑھتے غذائی نالی میں قرع اور سرطان کا سبب بن جاتی ہے۔
سینے کی جلن کے دوران اکثر اوقات سینے کی ہڈی کے پیچھے بے چینی اور سوزش کا احساس ہوتا ہے، منہ کا مزہ کھٹا کھٹا سا ہو جاتا ہے، ڈکار اور کھانسی آتی ہے، خرخراہٹ ہوتی ہے۔ کھانے کے بعد نیند مشکل سے آتی ہے، کھانا الٹ کر منہ کو آتا ہے اور گلے کی خراش ہو جاتی ہے یا آواز بھاری ہو جاتی ہے۔ جو عوامل سینے کی جلن کا موجب بنتے ہیں، ا ن میں تمباکونوشی ، بسیار خوری خصوصاً رات کو سونے سے پہلے زیادہ کھا لینا، وزن کی زیادتی اور کمر کے گرد تنگ لباس پہن کر زیادہ جھکنا شامل ہیں۔سینے کی جلن کے فوری خاتمے کے لئے زبردست گھریلو نسخہ درج ذیل ہے۔
کھجور : پانچ عدد
شہد : ایک کھانے کا چمچ
پانی : ایک گلاس
ترکیب اور طریقہ استعمال:
کھجوروں کو کسی برتن میں ڈال کر ساری رات پانی میں بھگو کر کھلے آسمان میں رکھ دیں ۔صبح ان میں سے گھٹلی نکال کرپانی سے علیحدہ کر کے میش کر لیں ۔ اب میش کی ہوئی کھجوروں میں شہد شامل کریں اور اسے نہار منہ کھا لیں اور بعد میں ایک گلاس تازہ پانی پی لیں۔ اسی طرح سات دن تک اس کا استعمال کریں۔اس سے انشاء اللہ سینے کی جلن مکمل طور پرجڑ سے ختم ہو جائے گی ۔
ایسے افراد جن کو سینے کی جلن کا مسئلہ ہے انہیں اپنی غذا میں تبدیلی کرنی چاہئے۔ ورزش کی طرف توجہ دینی چاہئے۔ اگر معدے پر بوجھ ہو اور تمباکو نوشی کی جائے تو سینے کی جلن کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔کھانا کھانے کے بعد اس طرح جھکنے سے گریز کریں کہ معدے پر بوجھ پڑے۔

کیٹاگری میں : صحت