سیب کے سرکہ کاروزانہ استعمال کولیسٹرول اور شوگر لیول کم رکھنے میں معاون ہے

1,136

سیب کا سرکہ استعمال کرنے سے ہچکیوں سے نجات ملتی ہے اور نزلہ زکام کو ختم کرنے میں یہ سرکہ صحت کے لیے بہت مفید مانا جاتا ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر ہچکیاں کسی طرح رک نہ رہی ہوں تو ایک چائے کا چمچ سیب کا سرکہ پینے سے آفاقہ ہو جائے گا۔ یہ سرکہ گلے میں انفیکشن کے لئے بھی انتہائی مفید ثابت ہوتا ہے۔

سرکے میں موجود تیزابی خصوصیات کے سامنے بیشتر جراثیم ٹک نہیں پاتے۔ چوتھائی کپ سیب کے سرکے میں چوتھائی کپ گرم پانی ملا کر پینے سے گلے کا انفیکشن ٹھیک ہو جاتا ہے۔ ایک جاپانی تحقیق کے مطابق روزانہ کچھ مقدار میں سیب کا سرکہ استعمال کرنے سے لوگوں میں کولیسٹرول کی سطح کم ہوتی ہے۔ نزلہ زکام کا شکار افراد سیب کا سرکہ استعمال کرکے دیکھیں۔

اس کے اندر پوٹاشیم موجود ہوتا ہے جو ناک کو کھولتا ہے جبکہ ایسٹک ایسڈ جراثیموں کی تعداد کو کم کرتا ہے اور ناک کھولنے کا کام کرتا ہے لہذا ایک چائے کا چمچ سیب کا سرکہ ایک گلاس پانی میں ملائیں اور پی لیں۔سیب کا سرکہ جسمانی وزن میں کمی کے لیے بھی فائدہ مند ہے اس میں موجود ایسٹک ایسڈ خوراک کی خواہش کم کرکے میٹابولزم کو تیز کرتا ہے۔ طبی ماہرین کے خیال میں یہ سرکہ جسم کے نظام ہاضمہ کو بھی تیز کرتا ہے جس کے نتیجے میں دوران خون میں بہت کم کیلوریز باقی رہتی ہیں۔

اس سرکے کی تیزابیت سر کی سطح میں تبدیلیاں لاکر خشکی کو دور کرتی ہے۔ چوتھائی کپ سیب کے سرکے کو چوتھائی کپ پانی میں ملا کر کسی اسپرے بوتل میں ڈال لیں اور پھر اپنے سر پر اس کا چھڑکاؤ کرنے کے بعد سر پر تولیہ لپیٹیں اور پندرہ منٹ سے ایک گھنٹے تک کے لیے بیٹھ جائیں اور پھر بالوں کو دھونے سے بہترین نتائج کے لیے ہفتے میں دو بار اس کو دہرائیں۔

کیل مہاسوں کو صاف کریں۔سیب کا سرکہ ایک قدرتی ٹونک ہے جو جلد کو صحت مند بناتا ہے۔ اس کی جراثیم کش خوبیاں کیل مہاسوں کو کنٹرول میں رکھتی ہیں جبکہ جلد کو نرم اور لچکدار بنانے کا کام بھی کرتی ہیں۔ورزش اور بہت زیادہ تناؤ جسم کو نڈھال کردیتا ہے مگر حیرت انگیز طور پر سیب کے سرکے میں موجود امینو ایسڈز اس کو دور کرنے کا کام کرتے ہیں۔ اس سرکے میں پوٹاشیم سمیت دیگر اجزاء بھی شامل ہیں جو تھکان کی کیفیت کو دور کرنے میں مددگار ثابت ہوسکتے ہیں۔

ایک یا دو چمچ سیب کے سرکے کو ایک گلاس میں پانی میں ملا کر پینے سے عصابی تھکاوٹ دور ہوتی ہے۔اگر برش کرنے اور ماؤتھ واش سے بھی سانس کی بو ختم نہیں ہورہی توسیب کے سرکے سے غرارے کریں یا ایک چائے کا چمچ پانی میں ملا کر پی لیں تاکہ بو پیدا کرنے والے بیکٹریا کا خاتمہ ہوسکے ۔سیب کے سرکے کی کچھ مقدار کو پینا بلڈ شوگر لیول کو متوازن رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ ذیابیطس ٹائپ ٹو کے مریضوں پر ہونے والی ایک تحقیق کے مطابق دو چائے کے چمچ سیب کا سرکہ سونے سے قبل پینے سے صبح گلوکوز کی سطح میں کمی ریکارڈ کی گئی۔